خیبر پختونخوا حکومت نے مالی مشکلات کو تسلیم کرتے ہوئے مقامی حکومتوں کیلئے مزید ترقیاتی فنڈز بہتر مالی حالات سے مشروط کر دیئے – Dadbedad Online

Breaking News

Home / نیوز اپڈیٹ / خیبر پختونخوا حکومت نے مالی مشکلات کو تسلیم کرتے ہوئے مقامی حکومتوں کیلئے مزید ترقیاتی فنڈز بہتر مالی حالات سے مشروط کر دیئے

خیبر پختونخوا حکومت نے مالی مشکلات کو تسلیم کرتے ہوئے مقامی حکومتوں کیلئے مزید ترقیاتی فنڈز بہتر مالی حالات سے مشروط کر دیئے

پشاور(محمد فہیم )خیبر پختونخوا حکومت نے مالی مشکلات کو تسلیم کرتے ہوئے مقامی حکومتوں کیلئے مزید ترقیاتی فنڈز بہتر مالی حالات سے مشروط کر دیئے ہیں اور واضح ہدایت کی گئی ہے کہ مقامی حکومتیں پہلے سے جاری ترقیاتی فنڈز کو ہی استعمال کریں۔ ذرائع کے مطابق خیبر پختونخوا کی متعدد ضلعی اور تحصیل حکومتوں نے محکمہ بلدیات کے توسط سے محکمہ خزانہ کو بھیجے گئے کئی مراسلوں میں رواں مالی سال کے ترقیاتی فنڈز کے اجراء کی درخواست کی تھی۔ مقامی حکومتوں کے مطابق انہوں نے صوبائی حکومت کی جانب سے 60فیصد ترقیاتی فنڈ کے استعمال کی شرط پوری کر لی ہے لہٰذا انہیں رواں مالی سال کے ترقیاتی فنڈز کی باقی دو اقساط بھی جاری کی جائیں۔ محکمہ خزانہ خیبر پختونخوا نے مقامی حکومتوں کو بھیجے گئے مراسلے میں اپنی مالی مشکلات تسلیم کرتے ہوئے کہا ہے کہ مزید ترقیاتی فنڈز صرف اسی صورت میں جاری کئے جا سکیں گے جب صوبائی حکومت کے مالی حالات بہتر ہوں۔ خیبر پختونخوا حکومت نے رواں مالی سال میں مقامی حکومتوں کیلئے صوبائی فنانس کمیشن کے تحت 29ارب 34کروڑ 50لاکھ روپے مختص کئے ہیں جس میں صوبائی حکومت نے گزشتہ برس نومبر کے مہینے میں 14ارب 55کروڑ 65لاکھ 53ہزار روپے کی دو اقساط جاری کی تھیں تاہم پانچ ماہ سے زائد کا عرصہ گزر جانے کے باوجود مزید ترقیاتی فنڈز جاری نہیں کئے جا سکے۔ محکمہ خزانہ خیبر پختونخوا کے ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت سے پن بجلی کے منافع اور قابل تقسیم محاصل کی مد میں صوبے کو اپنا حصہ ملنے میں وقت لگ رہا ہے جس کی وجہ سے مالی مسائل پیدا ہو گئے ہیں وفاقی سے فنڈز کی ترسیل بہتر ہونے کے بعد ہی مقامی حکومتوں کو مزید ترقیاتی فنڈزکے اجراء کا فیصلہ کیا جا سکے گا تاہم نئے بلدیاتی نظام کے نفاذ کے باعث بھی امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ موجودہ مقامی حکومتوںکو مزید ترقیاتی فنڈز جاری نہ کئے جا سکیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے