وادی بروغل کے 600طلبا کا تعلیمی مستقبل داو پر لگنے کا خدشہ – Dadbedad Online

Breaking News

Home / نیوز اپڈیٹ / وادی بروغل کے 600طلبا کا تعلیمی مستقبل داو پر لگنے کا خدشہ

وادی بروغل کے 600طلبا کا تعلیمی مستقبل داو پر لگنے کا خدشہ

 

چترال ( نمائندہ مشرق ) چترال کے پسماندہ ترین علاقہ بروغل کے عمائدین نے وزیر اعظم عمران خان ، وزیر اعلی محمود خان اور صوبائی وزیرتعلیم سے اپیل کی ہے کہ ان کے بچوں کا تعلیمی مستقبل بچانے کیلئے کمیونٹی بیسڈ سکولوں میں فوری طور پر اساتذہ کی تقرری کی جائے۔ ویلج ناظم بروغل امین جان تاجک ،کنونیئر سی بی ایس سکولز محمد عزیز ، محمد سعید لشکر گاز ،غلام نبی چلمر آباد ، منصور خان ، علی جان گرم چشمہ اور قدم علی کشمانجانے چترال پریس کلب میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نے کہا کہ بروغل وادی کی تعلیمی پسماندگی دور کرنے کیلئے مقامی لوگوں نے سکول کے لئے مفت زمین فراہم کی تھی ۔آغا خان ایجوکیشن سروس نے پانچ پرائمری سکول قائم کئے اور تین سال تعلیمی سہولیات فراہم کرنے کے بعدان سکولوں کو ایک این جی او کے حوالے کیا ۔ان کی کوششوں سے بروغل کے بچے اور بچیاں زیور تعلیم سے آراستہ ہو رہی ہیں۔ لیکن اب وزارت داخلہ نے این او سی نہ لینے پر این جی او کو کام کرنے سے روک دیا ہے۔ادارہ اپنی تمام تعلیمی سرگرمیاں ختم کر رہا ہے ۔ جس کی وجہ سے علاقے کے چھ سو طلباء کا مستقبل ایک مرتبہ پھر غیر یقینی ہوگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ 80کلومیٹر رقبے پر پھیلی ہوئی وادی میں صرف ایک سرکاری پرائمری سکول ہے ۔ جہاں پہنچنے کے لئے بچوں کو روزانہ چھ گھنٹے پیدل چلنا پڑ رہا ہے۔انہوں نے مطالبہ کیاکہ حکومت اگر مذکورہ این جی او کی تعلیمی سرگرمیوں کو ختم کرنا چاہتی ہے تو متبادل کے طور پر علاقے میں پانچ پرائمری اور ایک ہائی سکول قائم کرکے انہیں سٹاف مہیا کرے تاکہ بچوں کا تعلیمی سال ضائع نہ ہو ۔انہوں نے کہاکہ سکولوں کے لئے عمارات اور فرنیچر سمیت جملہ سہولیات موجود ہیں ۔ صرف اساتذہ کی تقرری کی ضرورت ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے